185.191.171.17 United Kingdom

08-Jun-2021

Raksy walo ko beach corahy par marpiet police waly dakty rah gy

by admin
ADVERTISEMENT



*نیوز الرٹ*
*بیوروچیف سندھ حاکم علی دل کارنامہ*

ADVERTISEMENT

*ٹھیلہ ہٹانے کا کیوں کہا؟*
*ہمارے باپ کی مرضی ہے*

*👈ٹھیلہ بیچ روڈ پر کھڑا کریں یا فٹ پاتھ پر سامنے ڈی سی اور موجود ان ٹریفک پولیس والوں سمیت کالی وردی والوں کو بھی روزانہ بھتہ دیتے ہیں*

*قائد آباد ٹھیلہ مافیا آپے سے باہر ہوگئی غریب رکشے ڈرائیور کو بیچ چوراہے پر زدوکوب کیا گیا*

ADVERTISEMENT

*👈ٹریفک پولیس ٹھیلہ مافیا کے خلاف کاروائی کرنے کے بجاے تماشائی بنے رہے*

*👈واضع رہے کہ موسم سرما کی دوسری لہر آتے ہی ملیر انتظامیہ نے لاکھوں روپے بھتے کے عوض مین قائد آباد چوک پر ٹھیلہ مافیا کو ٹھیکے پر دے رکھا ہے جن کی اجاداری کے باعث ڈی سی آفس کے سامنے پانچ سو سے زائد ٹھیلوں پر لنڈے کا سامان فروخت کیا جا رہا ہے ٹھیلہ مافیا نے مذکورہ مقام پر ایک ہزار گز سے زائد روڈ پر قابض ہو چکے ہیں*

*👈ملیر انتظامیہ کی نااہلی کی وجہ سے داود چورنگی سے براستہ پل قائد آباد آتے ہوے پل کی اترائی پر ٹھیلہ مافیا نے کچرا کنڈی کی آڑ میں لوہے کا ڈسبن رکھ کر روڈ بند کیا ہوا ہے اسی کچرا کنڈی کی آڑ میں قائد آباد فلائی اوور موڑ تک ٹھیلوں کی بھرمار ہے جس کی وجہ سے چوک پر تین ٹریک ہونے کے باوجود صرف ایک ٹریک پر ٹریفک رواں رہتا ہے*

*👈صبح و شام ڈیوٹی اوقات میں ٹریفک جام معمول بن چکا ہے*

*👈جبکہ قائد آباد سے گلشن حدید تک چلنے والے غیر قانونی چنگ چی رکشہ کا غیر قانونی قائد آباد چوک پر غیر قانونی اسٹینڈ بھی ٹریفک جام کی اصل وجہ بن چکے ہیں*

*👈لاکھوں روپے بھتے کے عوض ملیر انتظامیہ نے مخلوق خدا کو ٹریفک جام جیسی ذینی اذیت میں مبتلا کر دیا ہے*

Related Posts

Leave a Comment

Translate »